مقالات

 

خطبۂ غدیر ؛ تیسری قسط

ادیب عصر مولانا سید علی اختر رضوی شعور گوپال پوری

۷۔ اہل بیت کے دوست و دشمن
اے لوگو!میں اللہ کاوہ راستہ ہوں جومستقیم اور سیدھاہے اورجس کی پیروی کاخدانے حکم فرمایاہے پھرمیرے بعد علی ہیں اوران کے بعد میرے وہ فرزندجوعلی کے صلب سے ہیں ،وہ حق کی ہدایت کرنے والے امام ہیں اورحق کے مطابق انصاف کرنے والے ہیں۔ اس کے بعد آپ نے سورہ ٔ(الحمد) کی تلاوت فرمائی ،پھرفرمایاکہ یہ سورہ میرے بارے میں نازل ہواہے اوران اہل بیت کے بارے میں نازل ہواہے اوران کے لئے عام بھی اورانھیں کے لئے خاص ہے ،''وہی اللہ کے ایسے ولی ہیں جن کونہ خوف ہوگااورنہ وہ کبھی غمگین ہوں گے''۔ آگاہ رہوکہ'' خداکاگروہ ہی ہرحال میں غالب رہے گا''۔
آگاہ رہوکہ یقینادشمنان علی ہی ہٹ دھرمی کرنے والے، حدسے گزرنے والے اورشیطانوں کے بھائی ہیں،جودھوکادینے کے لئے ایک دوسرے کاکان پھونکتے رہتے ہیں آگاہ رہوکہ ان کے دوست ہی واقعی مومن ہیں ،جن کے بارے میں خدنے اپنی کتاب میں فرمایاہے :''تم کبھی ایسانہ پاؤگے کہ جولوگ اللہ اورآخرت پرایمان رکھنے والے ہیں ،وہ ا ن لوگوں سے محبت کرتے ہوں جنھوں نے اللہ اوراس کے رسول کی مخالفت کی ہے ،خواہ ان کے باپ ہوں یاان کے بھائی ،یاان کے خاندان والے یہ لوگ ہیں جن کے دلوں میں اللہ نے ایمان داخل کردیاہے اوراپنی طر ف سے ایک روح عطاکرکے ان کوقوت بخشی ہے ،وہ ان کوایسی جنتوں میں داخل کریگا،جن کے نیچے نہریں بہتی ہوں گی ،ان میں وہ ہمیشہ رہیں گے ،اللہ ان سے راضی ہوااوروہ اللہ سے راضی ہوئے یہی لوگ اللہ کی پارٹی ہیں ، خبرداررہو!اللہ کی پارٹی والے ہیں، فلاح پانے والے ہیں''۔
آگاہ رہوکہ ان کی صفت اللہ نے اس طرح بیان کی ہے: ''جولوگ ایمان لائے اورجنھوں نے ایمان کوظلم سے آلودہ نہیںکیاانھیں کیلئے امن ہے اوریہی لوگ ہدایت یافتہ ہیں''۔
آگاہ رہو کہ انہیں کی صفت خدا نے اس طرح بیان کی ہے :''جو لوگ جنت میںامن کے ساتھ داخل کئے جائیں گے اورملائکہ انھیں سلامتی کے ساتھ ہاتھوں ہاتھ لیں گے اورکہیں گے کہ تم پاک ہواوراب ہمیشہ کے لئے جنت میں داخل ہوجائو''۔
آگاہ رہوکہ انھیں کے بارے میں خدانے فرمایاہے: ''وہ لوگ جنت میں بے حساب داخل کئے جائیں گے ''۔آگاہ رہوکہ ان کے دشمنوں کوخداجہنم کی آگ میں جھونک دے گا۔
آگاہ رہوکہ'' ان کے دشمن ہی جہنم کے دہانے کی ہولناک آواز سنیں گے اوروہ جوش کھارہی ہوگی اورہرگروہ جب جہنم میں داخل ہوگاتو اپنے پیش روگروہ پرلعنت کرتا ہوا داخل ہوگایہاں تک کہ جب سب وہاںجمع ہوجائیں گے توہربعدوالاگروہ پہلے گروہ کے حق میں کہے گاکہ ائے رب یہ لوگ تھے جنہوں نے ہم کوگمراہ کیالہذاانہیں آگ کا دوہرا عذاب دے جواب میں ارشاد ہوگاہرایک کے لئے دو ہرا ہی عذاب ہے مگرتم جانتے نہیں ہو '' ۔
آگاہ رہوکہ انھیں کے دشمنوں کے بارے خدانے فرمایاہے :''ہربارجب کوئی فوج اس میں ڈالی جائے گی تواس کے کارندے ان لوگوں سے پوچھیں گے کیاتمہارے پاس کوئی خبردار کرنے والا نہیں آیاتھا؟ وہ جواب دیں گے :خبردارکرنے والاہمارے پاس آیاتھا مگرہم نے اسے جھٹلایااورہم نے کہاکہ اللہ نے کچھ بھی نازل نہیں کیا ہے تم بڑی گمراہی میں پڑے ہوئے ہو''۔
آگاہ رہوکہ علی کے ددست دار ہی غیب کومانتے ہوئے اپنے رب سے ڈرتے ہیں انھیں کے لئے مغفرت ہے اوربہت بڑااجرہے ۔
اے لوگو!جہنم کی بھڑکتی آگ اورجنت کے درمیان بڑافرق ہے ہمارے دشمن وہ ہیں جن کی خدانے مذمت کی ہے اوران پرلعنت کی ہے اورہمار ے دوست وہ ہیں جن سے خدامحبت کرتاہے اوران کی مدح کی ہے ۔
اے لوگو!میں ڈرانے والاہو ں اورعلی ہادی ہیں ۔

٨۔ حضرت مہدی (عج)
اے لوگو!میں نبی ہوں اورعلی میرے وصی ہیں آگاہ ہوجاؤ کہ یقیناخاتم الائمہ قائم مہدی(عج) ہم میں سے ہے ۔آگاہ ہوجائوکہ وہی تمام ادیان پرغالب رہے گا،خبردار ہوجائو کہ وہی ظالموںسے انتقام لے گا۔آگاہ رہوکہ وہی قلعہ فتح کرنے والااور انھیں ڈھانے والاہے آگاہ رہوکہ وہی ہرمشرک قبیلہ کاقاتل ہے ۔خبرداررہوکہ وہی تمام اولیاء خداکے ہرخون ناحق کابدلہ لینے والاہے ۔ آگاہ رہوکہ وہی دین خداکامددگارہے خبردار وہی گہرے سمندرسے چلو بھرنے والاہے آگاہ رہوکہ ہرفضیلت کواسکی علامتی برتری کے ساتھ پہچاننے والا ہے ،اور ہرجاہل کواس کی جہالت کے ساتھ پہچاننے والاہے،آگاہ رہوکہ وہی خداکابرگزیدہ اور پسندیدہ ہے ،آگاہ رہوکہ و ہی ہرعلم کاوارث اوراس کااحاطہ کرنے والاہے ،آگاہ رہو کہ وہی خدائے برتر کی طرف سے خبردینے والااورایمان کے سلسلہ میں انتباہ دینے والاہے ، آگاہ رہوکہ وہی ذہین ہے وہی متین ہے ،آگاہ رہوکہ تمام معاملات اسی کے سپرد ہوں گے ،آگاہ رہوکہ اس سے پہلے جولوگ گذرے انھوں نے اس کی بشارت دی ہے ، آگاہ رہو کہ وہی باقی رہنے والاحجت ہوگا،اس کے بعد کوئی حجت خدانہ ہوگاسوائے اس کے حق کسی کے ساتھ نہ ہوگا،سوائے اسی کے کسی کے پاس نور نہ ہوگا ۔
آگاہ رہوکہ اس پرکوئی غلبہ نہ پاسکے گانہ کوئی اس پرفتح پاسکے گا،آگاہ رہوکہ وہی خداکے زمین پراللہ کاولی ہوگا، اورمخلوق پراس کاحاکم ہوگااورخداکی پوشیدہ وعلانیہ امور کاامین ہوگا۔

٩۔ بیعت کی پیش کش
اے لوگو!میں نے واضح طریقہ پرتمہارے سامنے تمام باتیں بیان کردیںاورتمھیں سمجھادیا اوریہ علی اب میرے بعد تمھیں سمجھائے گا آگاہ رہوکہ میں اپناخطبہ ختم کرنے کے بعد تمہیں بلائوں گا کہ علی کی بیعت کرنے کے لئے میرے ہاتھ پرہاتھ مارو اوراس کااقرار کروپھر میرے بعد اس کے ہاتھ پرہاتھ مارو ۔
آگاہ رہوکہ میں نے خداکی بیعت کی اورعلی نے میری بیعت کی اوراب میںخدا کے حکم سے اس کی بیعت تم سے لیتاہوں اب جواس عہد کوتوڑے گا اس کی عہد شکنی کا وبال اس کی اپنی ذات پرہوگااور جواس کووفاکرے گاجواس نے اللہ سے کیاہے تواللہ اس کوعنقریب شاندار اجرکرامت فرمائے گا۔

١٠۔ فروعات دین
اے لوگو!یقیناحج وعمرہ اورصفاومروہ اللہ کی نشانیوں میں سے ہیں ،''لہذاجوشخص بیت اللہ کاحج یاعمرہ کرے ،اس کے لئے کوئی گناہ کی بات نہیں کہ وہ ان دونوں پہاڑیوں کے درمیان سعی کرے جورضاورغبت کے ساتھ کوئی بھلائی کاکام کرے گا تواللہ کو اس کوعلم ہے اوروہ اس کی قدردانی کرنے والاہے ''۔
اے لوگو!خانہ خداکاحج کیاکرواس لئے کہ جس خاندان کے لوگ بیت اللہ جائیں گے وہ مالدار ہوجائیں گے جواستطاعت کے باوجود حج سے جی چرائیں گے وہی فقیر اورمفلس ہوجائیں گے ۔
اے لوگو! جومومن موقف میں کھڑاہوگاتوخدااس کے تمام پچھلے گناہ اس وقت تک بخش دے گا لہذاجب حج پوراہوچکے تو وہ اپنے عمل کوازسرے نوشروع کرے ۔
اے لوگو! حاجیوں کو مدد دی جائے گی اورحج کے سلسلے میں ان کے خرچ کابدلہ دیاجائے گااورخدانیکی کرنے والوں کااجرضائع نہیں کرتا ۔
اے لوگو!نماز قائم کرواورزکات دو جیساکہ خدانے تمھیں حکم دیاہے اگرتمھاری مدت حیات طویل ہواورتم سے کسی قسم کی کوتاہی ہوجائے یابھول جائو توعلی تمھارے سرپرست ہیں اوردین کی باتوںکو وضاحت کے ساتھ بیان کرنے والے ہیں جنھیں خدانے میرے بعد منتخب فرمایاہے اوراس نے اپنااورمیراخلیفہ نامزد کیاہے ،یہ تمھیں وہ ساری باتیں بتائیںگے جوان سے پوچھوگے اوروضاحت کے ساتھ بیان کریںگے جنھیں تم نہیں جانتے ۔
آگاہ رہوکہ حلال وحرام اس سے کہیں زیادہ ہیں کہ میں ان کااحاطہ کروں اوربتائوں لہذامیں ایک ہی موقع پرحلال کوبجالانے اور حرام سے پرہیز کاحکم دیتاہوں لہذامجھے حکم دیاگیاہے کہ میں تم سے بیعت لے لوں اس بات پرکہ امیر المومنین علی اور ان کے بعد ہونے والے اماموں جواس سے اورمجھ سے ہوں گے اورحق پرقائم رہنے والے ہوں گے ،مہدی بھی انھیں میں سے ہوگااوربرحق فیصلہ کرے گا اوران سب کی امامت قبول کرے گا اس لئے اب تم لوگ بیعت کے لئے میرے ہاتھ پرہاتھ مارو۔
اے لوگو!وہ سبھی حلال باتیں جن کی میں نے نشاندہی کردی ہے ،اور تمام حرام باتیں جن سے میں نے منع کیاہے ، میں اپنی باتوں سے نہ کبھی پھروں گا اورنہ بدلوں گا،اس لئے تم بھی ان کواچھی طرح یادرکھو اوران کی حفاظت کرواس کے بارے میں باہم ایک دوسرے کے بارے میں نصیحت کرتے رہو،اورانھیں بدلنانہیں اورنہ ان میں تغیر پیدا کرنا۔
''یادرکھومیں اس با ت کوپھردوبارہ تم سے کہتاہوں آگاہ رہو تم نماز قائم کرتے رہنا ، زکاة دیتے رہنا اورنیکی کاحکم دیتے رہنااوربرائی سے منع کرتے رہنا ''
یاد رکھو امربالمعروف کاسرنامہ یہ ہے کہ میرے کہنے کے مطابق عمل کرو جولوگ یہاںموجودنہیں ہیں انہیںمیراپیغام پہنچائو، اسے مان لینے کی ترغیب دو اوراس کی مخالفت کرنے سے منع کروکیونکہ یہ خدا کی طرف سے اورمیری طرف سے حکم ہے اور بغیر امام کے نہ امربالمعروف کی کوئی حیثیت ہے اورنہ نہی عن المنکرکی ۔
اے لوگو!قرآن تجھے بتاچکاہے کہ میرے بعد جوامام ہوں گے وہ اسی علی کی نسل سے ہوں گے اورمیں تمھیں بتاچکاہوں کہ یہ علی مجھ سے ہے اورمیں اس سے ہوں ،جیساکہ خداوند عالم کاارشادہے : ''اورانہوں نے اسی پیغام کواپنی نسل میں ایک کلمہ باقیہ قراردیاہے کہ شاید وہ لوگ خداکی طرف پلٹ آئیں''۔اور میں نے بھی اس سلسلہ میں کہاہے کہ ''جب تک تم ان سے وابستہ رہوگے کبھی گمراہ نہ ہوگے ''۔
اے لوگو!تقویٰ اختیارکرو،دیکھوتقویٰ کادامن ہاتھ سے جانے نہ پائے ،قیامت سے ڈرو جیساکہ خداوندعالم نے فرمایاہے ''بلاشبہ قیامت کازلزلہ بہت بڑے ہنگامہ کی چیز ہے '' موت کویاد رکھو،حساب اوراعمال تولے جانے نیز خداکے حضورمیں محاسبہ اورثواب و عقاب کویاد رکھو۔جوشخص نیکی لے کرآئے گا وہ ثواب سے نہال ہوگا اور جو شخص برائی لے کرآئے گا اس کاجنت میں کوئی حصہ نہیں ۔

١١۔قانونی بیعت
اے لوگو!تم اتنے زیادہ ہو کہ ایک ایک میرے ہاتھ پر ہاتھ مار کر بیعت نہیں کرسکتے ہو ، لہذا اللہ نے مجھے حکم دیاہے کہ میں تمہاری زبان سے علی کے امیر المومنین ہونے اور ان کے بعد کے ائمہ جو ان کے صلب سے میری ذریت ہیں ،سب کی امامت کا اقرارلے لوں ، لہذا تم سب مل کر کہو : ہم سب آپ کی بات کے سننے والے ،اطاعت کرنے والے ، راضی رہنے والے اورعلی اور اولاد کے بارے میں جو پروردگار کا پیغام پہونچایا ہے اس کے سامنے سر تسلیم خم کرنے والے ہیں ، ہم اس بات پر اپنے دل ، اپنی روح ،اپنی زبان اور اپنے ہاتھوں سے بیعت کررہے ہیں ، اسی پر زندہ رہیں گے ، اسی پر مریں گے اور اسی پر دوبارہ اٹھیں گے ، نہ کوئی تغیر و تبدیلی کریں گے اور نہ کسی شک و ریب میں مبتلا ہوں گے ، نہ عہد سے پلٹیں گے نہ میثاق کو توڑیں گے ۔اللہ کی اطاعت کریں گے ، آپ کی طاعت کریں گے اور علی امیر المومنین اور ان کی اولاد ائمہ جو آپ کی ذریت میں ہیں ، ان کی اطاعت کریں گے ،جن میں سے حسن و حسین کی منزلت کو اور ان کے مرتبہ کو اپنی اور خدا کی بارگاہ میں تمہیں دکھلادیا اور یہ پیغام پہونچادیاہے کہ یہ دونوں جوانان جنت کے سردار ہیں اور اپنے باپ علی کے بعد امام ہیں اور میں علی سے پہلے ان دونوں کا باپ ہوں۔ اب تم لوگ یہ کہو کہ ہم نے اس بات پر اللہ کی اطاعت کی ، آپ کی اطاعت کی اور علی ، حسن وحسین اور ائمہ جن کا آپ نے ذکر کیاہے اور جن کے بارے میں ہم سے عہد لیاہے ، سب کی دل و جان سے اور دست وزبان سے بیعت کی ہے ۔ ہم اس کا کوئی بدل پسند نہیں کریں گے اور نہ اس میں کوئی تبدیلی کریں گے ۔ اللہ ہمارا گواہ ہے اور وہی گواہی کے لئے کافی ہے اور آپ بھی ہمارے گواہ ہیں ، ہر ظاہر و باطن ، ملائکہ اور بندگان خدا سب اس بات کے گواہ ہیں اور اللہ ہر گواہ سے بڑا گواہ ہے ۔
اے لوگو!اب تم کیا کہتے ہو...؟ یا رکھو کہ اللہ ہر آواز کو جانتا ہے اور ہر نفس کی مخفی حالت سے باخبر ہے ،'' جو ہدایت حاصل کرے گا وہ اپنے لئے اور جو گمراہ ہوگا وہ اپنا نقصان کرے گا''،'' جو بیعت کرے گا اس نے گویا اللہ کی بیعت کی ، اس کے ہاتھ پر اللہ کا ہاتھ ہے'' ۔
اے لوگو!اللہ سے ڈرو، علی کے امیر المومنین ہونے اور حسن و حسین اور ائمہ کے کلمہ باقیہ ہونے کی بیعت کرو ، جو غداری کرے گا اسے اللہ ہلاک کردے گا۔''اب اس کے بعد جو بیعت کو توڑ دے گا وہ اپنے ہی خلاف اقدام کرے گا اور جو عہد الہی کو پورا کرے گا خدا عنقریب اسی کو اجر عظیم عطا کرے گا ''۔
اے لوگو! جو میں نے کہاہے وہ کہو اور علی کو امیر المومنین کہہ کر سلام کرو ۔'' اور کہو کہ ہم نے سنا اور اطاعت کی ، ہمیں تیری مغفرت چاہئے اور تیری ہی طرف ہماری بازگشت ہے'' اور یہ کہو کہ'' شکر پروردگار ہے کہ اس نے ہمیں اس امر کی ہدایت دی ہے ورنہ اس کی ہدایت کے بغیر ہم راہ ہدایت نہیں پاسکتے تھے... ''۔
اے لوگو! علی بن ابی طالب کے فضائل اللہ کی بارگاہ سے ہیںاور اس نے قرآن میں بیان کیاہے اوراس سے زیادہ ہیں کہ میں ایک منزل پر شمار کراسکوں ،لہذا جو بھی تمہیں خبر دے اور ان فضائل سے آگاہ کرے اس کی تصدیق کرو ، یاد رکھوجو اللہ ، رسول ، علی اور ائمہ مذکورین کی اطاعت کرے گا وہ بڑی کامیابی کا مالک ہوگا ۔
اے لوگو! جو علی کی بیعت ، ان کی محبت اور انہیں امیر المومنین کہہ کر سلام کرنے میں سبقت کریںگے وہی جنت نعیم میں کامیاب ہوں گے۔
اے لوگو! وہ بات کہو جس سے تمہارا خداراضی ہوجائے ورنہ تم اورتمام اہل زمین بھی منکر ہوجائیںتو اللہ کو کوئی نقصان نہیں پہونچاسکتے ۔خدایا ! مومنین و مومنات کی مغفرت فرما اور کافرین پر اپنا غضب نازل فرما۔
والحمد للہ رب العالمین

توجہ طلب : ولایت امیر المومنینؑ سے متعلق اس مفصل خطبۂ رسول ؐ کو علامہ ابو علی طبرسی نے اپنی معروف کتاب "الاحتجاج" میں نقل کیاہے اور اس کے علاوہ بھی معتبر کتابوں میں اس خطبے کے متون موجود ہیں، اس مفصل خطبۂ غدیر کو مزید تحقیق کے ساتھ ادیب عصر مولانا علی اختر رضوی مرحوم کی کتاب "شعور ولایت " میں شامل کیاگیاہے ، اس کتاب میں ولایت و غدیر کے موضوع پر دوسرے اہم مضامین بھی شامل ہیں ۔(سید شاہد جمال رضوی)

مقالات کی طرف جائیے